واپسی

غیر حاضری کچھ زیادہ طویل تو نہیں ہو گئی؟ اصل میں مسئلہ یہ ہوگیا کہ رمضان کے آخری عشرے میں ویسے ہی مصروفیات میں اضافہ ہو جاتا ہے اور لکھنے لکھانے کا زیادہ وقت نہیں رہتا پھر عید الفطر کی تعطیلات سے فارغ ہوا تو معلوم ہوا کہ بلاگ میں کوئی مسئلہ ہو گیا ہے اور میں ایڈمن سیکشن میں داخل نہیں ہو پا رہا تھا۔ بدتمیز بھائی کی مہربانی اور نظر کرم سے آج بلاگ ٹھیک ہوا ہے اس لیے یہ آزمائشی پوسٹ کر رہا ہوں۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

4 تبصرے

  1. آپ کو دوبارہ دیکھ کر خوشی ہوئی، کارساز دھماکے کے بعد سے ہی آپ غیر حاضر تھے۔ میں سمجھا کہ دھماکے میں کام آگئے، اس غم میں کئی روز سے موم بتیاں جلارہا تھا۔ اب غصے میں‌ آکر ساری موم بتیاں بجھا کر توڑ مروڑ کر پھینک دی ہیں۔
    دلاں تیر بجاں۔۔ الے
    وتی دشمناں تو۔۔۔اپو

  2. آپکی بخیریت واپسی کا سن کر دلی خوشی ہوئی اور مخالفین پر گھڑوں بلکہ کولروں پانی پھر گیا۔ 😉

  3. ایک بار پھر خوش آمدید 😆

  4. ابوشامل says:

    *خاور صاحب! موم بتیاں کیوں توڑ رہے ہیں، ویسے ہی آجکل بہت مہنگی ہو گئی ہیں۔ آپ روٹیاں توڑ رہے ہیں یہی کافی ہے 😉
    *ساجد صاحب! چلیں "مخالفین" اس بہانے نہا تو لیے 😉
    *پاکستانی بھائی! بہت شکریہ

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.