فیض لاہوری نستعلیق

تحریر از ڈیولپمنٹ ٹیم برائے فیض لاہوری نستعلیق

یہ فانٹ جدید ترین انپیج ۳ میں شامل کردہ فیض نستعلیق کے خوبصورت ترسیمہ جات کی مدد سے تخلیق دیا گیا ہے۔ اس کا بیس فانٹ جوہر نستعلیق کی اشکال پر مبنی ہے جس کو لاہوری خط میں ڈھالنے کیلئے بہت صفائی کا خیال رکھا گیا ہے۔

تخلیق:

نوری نستعلیق اردو ٹائپو گرافی و پبلشنگ کے میدان میں تقریباً ۲۸ سال سے حکمرانی کر رہا ہے۔ اسکی آمد سے پہلے کاتب حضرات لاہوری نستعلیق میں ہی کتب و رسائل کی کتابت کرتے تھے۔ ۱۹۸۱ء میں نوری نستعلیق ایک مشینی انداز لے کر حاضر ہوا جس نے جلد ہی اردو پبلشنگ میں ایک خاص مقام حاصل کر لیا۔
آہستہ آہستہ ہاتھ کی خوبصورت کتابت ناپید ہوگئی اور یوں زمانہ جدید میں حقیقی اردو خط یعنی لاہوری نستعلیق کی کمی کا احساس شدت اختیار کر گیا۔ گو کہ مارکیٹ میں پہلے ہی نفیس نستعلیق اور اردو ماہر جیسے لاہوری طرز کے خطوط دستیاب تھے۔ مگر یہ سب صرف حرفی بنیادوں پر چلنے کی وجہ سے پبلشنگ انڈسٹری اور خاص کر انٹرنیٹ کیلئے ناقابل استعمال تھے۔
۲۰۰۸ء کے آخر میں جب انپیج ۳ ریلیز ہوا تو فیض نستعلیق کی جدت سے متاثر ہو کر اس پراجیکٹ پر کام شروع کیا گیا۔۔۔ ابتداء میں ہمیں بہت سے ٹیکنیکل مسائل کا سامنا کرنا پڑا۔ ہزاروں لگیچرز کو ایک فانٹ میں سمونا کوئی آسان کام نہیں تھا۔ خاص کر جب آپ کے پاس ایک بھی لگیچر مکمل حالت میں موجود نہ ہو۔ مگر پھر قسمت نے ساتھ دیا اور ہمیں کچھ ایسے پروگرامز مل گئے جن کی بدولت سالوں کا کام چند مہینوں میں ہو گیا۔
لگیچرز کے حصول کے بعد اہم مرحلہ ایک ایسے حرفی فانٹ کی تکمیل تھی جس کی بنیاد پہ ترسیمہ جات گاڑے جا سکیں۔ متعدد نستعلیقی خطوط پر ٹیسٹس لئے گئے مگر ان میں سے کوئی بھی فیض لاہوری نستعلیق کے پاس سے بھی نہیں گزرا۔ آخر کار تنگ آکر ہم نے خود ہی اس کٹھن ترین کام کو بھی کرنے کی ٹھانی اور ۲ مہینے کی جدو جہد کے بعد ایک خوبصورت کیریکٹر بیسڈ فانٹ تخلیق کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

لگیچرز :

کسی بھی نستعلیقی فانٹ کی خوبصورتی اس میں شامل ترسیمہ جات کی تعداد پر منحصر ہے۔ یہ فانٹ اب تک ریلیز ہونے والے کسی بھی اردو فانٹ کے مقابلہ میں زیادہ لگیچرز حاصل کرنے کا ریکارڈ رکھتا ہے۔ اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ۳۷۰۰۰ سادہ، ۳۷۰۰ قرآنی (بغیر اعراب کے) اور قریباً ۲۱۰۰ اعراب والے لگیچرز شامل کئے گئے ہیں۔ یوں ترسیمہ جات کی کُل تعداد ۴۳۰۰۰ لگیچرز سے تجاوز کر چُکی ہے!

لاطینی فانٹ:

ویب اور پرنٹ میڈیا کی کوالٹی کو دیکھتے ہوئے اس میں لاطینی فانٹ Arial Normalکے گلفس شامل کیے گئے ہیں۔ جو اسکی خوبصورتی میں مزید اضافے کا باعث ہیں۔

القابات :

چونکہ یہ فانٹ اسلامی کتب کی کمپوزنگ کیلئے بہت موزوں ہے۔ اس لئے جمیل نوری نستعلیق میں شامل القابات کو یہیں امپورٹ کر دیا گیا ہے۔ اس کی تفصیل ریلیز پیکیج میں دیکھیں۔

مسائل:

چونکہ تمام لگیچرز ایک حد تک دستی طور پر بنائے گئے ہیں۔ اس لئے بعض ترسیمہ جات کے ساتھ کرننگ/بیرنگز کے مسائل نظر آئیں گے۔ انشاءاللہ ان کو بھی آئندہ ریلیزیز میں بہتر کر دیا جائے گا۔

لائسنس:

یہ فانٹ تمام محبان اردو کیلئے بالکل مفت ہے! اسے آپ اپنی ویب سائٹ، بلاگ، فارم، ٹی وی غرض ہر جگہ پر بے دریغ استعمال کر سکتے ہیں۔ البتہ اپنے نام سے اسکو بیچنا یا اسکا کسی بھی رنگ میں غلط فائدہ اٹھانا منع ہے۔

فیض لاہوری نستعلیق ڈاؤن لوڈ کیجیے

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

7 تبصرے

  1. خاور says:

    یارو یه سب بنانے والے کن هیں ان کو ذرا یه تو کہو که الله کے نام کو د سے نهیں ه سے لکھنے کا فانٹ بنا کردیں
    جب بھ کمپیوٹر پر نستعلیق میں الله لکھتے هیں اخر پر د بن جاتی ہے

  2. آپ کو شاید غلط فہمی ہو رہی ہے خاور صاحب! اللہ کے آخر میں یہ "د" نہيں ہے بلکہ "ہ" ہی ہے۔ نستعلیق خطاطی میں یہ اللہ لکھنے کا ایک انداز ہے۔

  3. ابو شامل
    یار یہ فانٹ کی تصاویر میرے لیپ ٹاپ پر کچھ پابندیوں کی وجہ سے نظر نہیں آ رہی تو براہ کرم مجھے ای میل کر دیں تاکہ لاہوری خط کا فیض میں بھی آنکھوں سے دیکھ سکوں.

  4. محب صاحب! حکم ہے آپ کا، ابھی کیے دیتا ہوں۔

  5. آٓپ کی کوششوں سے انشاء اللہ اردو کی ترویج و ترقی میں چار چاند لگ جائیں گے۔ میری طرف سے بہت بہت مبارک قبول ہو۔ ناچیز نے آٓپ کے لیے بہت سے تحائف تخلیق کیے ہیں جو مائیکروسافٹ پاور پوائنٹ میں اردو میں ہیں۔ یہ سی ڈیز کی شکل میں ہیں ۔ کافی مواد پر مشتمل ہیں جنہیں ای میل کرنا ممکن نہیں ہے۔
    میرا پتہ یہ ہے۔ اشتیاق احمد سینئر ماہرِ مضمون طبعیات گورنمنٹ ہائر سیکنڈری سکول ٹبہ سلطان پور ضلع وہاڑی فون 03017576815

  6. عثمان says:

    janab yh font download page nhe day rha or na he download ho rha hy.
    mujhay mairy email par faize lahore font send kardain.thnx

  7. ڈاکٹر ریحان انصاری says:

    السلام علیکم، محترم ابو شامل صاحب، یہ اتفاق ہی ہے کہ کچھ تلاش کرتے ہوئے آپ کے اس مضمون تک پہنچا ہوں۔ خیر سے کافی پرانی پوسٹ ہے لیکن اس میں فیض نستعلیق کے (ڈیجیٹل) خطاط کا نام شامل نہیں پا کر شکایت پیدا ہو گئی ہے۔ آپ کے علم میں شاید اس لیے نہیں ہوگا کہ کسی نے افشا نہیں کیا۔ میں ذاتی طور پر آپ کو مطلع کر رہا ہوں کہ فیض نستعلیق کی مکمل ڈیجیٹل کتابت اسی خاکسار (داکٹر ریحان انصاری، بھیونڈی، مہاراشٹر، انڈیا) نے کی ہے اور اسکی نگرانی استاذی محمد اسلم کرتپوری صاحب (ممبئی) نے کی ہے۔ فونٹ کا پیکر دینے کا کام محبی سید منظر (ایکسس سافٹ میڈیا، ممبئی) نے کیا۔ مجھے امید ہے کہ آپ اس مضمون کی سطور میں اس اطلاع کو شامل کرکے مکمل کریں گے۔ شکریہ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.