یوم مہران، شاہراہ مہران پر

عرصہ سے میں نے اخبارات میں آنے والی غلطیوں پر اپنے قلم کو روکے رکھا ہے لیکن آج جتنی بڑی غلطی جنگ اخبار سے کی ہے، اس نے مجھے مجبور کر دیا ہے کہ اس کا ذکر یہاں کیا جائے۔
آج جنگ اخبار کے صفحۂ اول پر سرخی کے نیچے ایک خبر کچھ یوں ہے

"سندھ کے عوام اتوار کو انڈس ہائی وے کے طور پر منائیں، وزیر اعلیٰ"

یہ دراصل وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی جانب سے اتوار کو "انڈس ڈے" منانے کا مطالبہ ہے جسے جنگ اخبار کے عظیم مدیران نے "انڈس ہائی وے" کر دیا۔

یوں جنگ کے کارناموں کی فہرست میں ایک اور شاندار اضافہ ہوا۔ اس کارنامے پر تو جنگ اخبار کے مدیران کا نام سنہری حروف سے لکھا جانا چاہیے۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

8 تبصرے

  1. arifkarim says:

    بھائی ابو شامل یہ لوگ بیچارے ڈیڈ لائن پر کام کرتے ہیں۔ پاکستان کو چھوڑیے، ترقی یافتہ ملک جیسے ناروے کے بڑے اخبار بھی ایسی ہی سنگین نوعیت کی املاء کی غلطیاں کرتے رہتے ہیں۔

    • دیکھیں عارف! غلطیاں تو ہوتی ہیں، لیکن پہلا صفحہ خاص طور پر کئی ایڈیٹرز کی نظروں سے گزرتا ہے اور وہاں اس قسم کی غلطی انتہائی سنگین شمار ہوتی ہے۔

  2. فارغ says:

    یہ پاکستان کا سب سے بڑا اخبار ہے ، میرا نہیں خیال کہ کسی اور ملک کہ سب سے بڑے ادارے کا کوئی پبلیکیشن اس طرح کی غلطیاں کرتا ہوگا. جنگ میں آپ ایسی غلطیاں ہر چند روز بعد دیکھ سکتے ہیں.

  3. دورِ حاضر میں جو جتنی بڑی غلطی کر کے نکل جائے وہ اتنا بڑا سورما کہلاتا ہے اور جو دوسرے کے سچ کو جھوٹا ثابت نہ کر سکتا ہو مگر اپنی لمبی تقریریا تحریر سے اسے چپ ہو جانے پر مجبور کر دے وہ سب سے زیادہ ذہین اور تعليم یافتہ سمجھا جاتا ہے

  4. اکثر غلطیوں پر اخبار والے اگلے دن معذرت کر لیتے ہیں.

  5. حضرت اکثر اوقات تو مجھے یوں محسوس ہوتا ہے کہ ایڈیٹر اور پروف ریڈر جیسے اہم عہدے اخبارات سے ختم کردیے گئے ہیں یا پھر کام چلاؤ کی پالیسی تمام پالیسیوں کی ماں بنا دی گئ ہے. املا کی غلطیاں، ٹرانسلٹریشن کے مسائل اور کئی بار تو جغرافیہ کی ایسی سنگین غلطیاں کے آدمی سر پکڑ کر رہ جائے.. سیاسی بیانات چھاپنے کو صحافت بنادیا جائے تو پھر رفتہ رفتہ یہ چیزیں عام ہوجاتی ہیں. غلطی ہونا بڑی بات نہیں لیکن جب ایک ہی غلطی معمول بن جائے تو اسے نظر انداز نہیں کیا جاسکتا.

  6. زبیر انجم says:

    انسان خطاء کا پتلا ہے یا پتلے کی خطاء

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.