وہ ایک چھکا ۔۔۔ یہ ایک فتح

1986ء میں جاوید میانداد نے شارجہ کے میدان میں چیتن شرما کو ایک چھکا رسید کیا اور اس ایک چھکے نے عرصۂ دراز تک بھارت پر پاکستان کا دبدبہ قائم کر دیا اور ایک روزہ کرکٹ میں پاکستان کے اس پہلے کے نتیجے میں قومی ٹیم کا جو مورال بلند ہوا وہ بالآخر پاکستانی کرکٹ تاریخ کے اس عظیم ترین لمحے پر منتج ہوا جب 1992ء میں پاکستان نے دنیائے کرکٹ کا سب سے بڑا اعزاز "ورلڈ کپ" جیتا۔
ورلڈ کپ میں فتح کے 17 سال بعد جب درمیانی عرصہ میں قومی کرکٹ کئی نشیب و فراز سے گزرنے کے بعد اب تقریباً لبِ گور تھی۔ 2007ء کے ورلڈ کپ میں پہلے راؤنڈ ہی میں ناکامی نے ٹیم سے وابستہ امیدوں کے چراغ تقریباً گل کر دیے اور ملکی کرکٹ کو تباہی کے دہانے پر آ کھڑی ہوئی۔ ملک میں امن و امان کے مسائل نے رہی سہی کسر بھی پوری کر دی۔ کرکٹ کی بین الاقوامی انجمن (آئی سی سی) اس سے چمپئنز ٹرافی کی میزبانی سے محروم کرنے کے بعد ورلڈ کپ 2011ء سے بھی محروم کر چکی ہے، دنیا کی سب سے بڑی لیگ کرکٹ "انڈین پریمیر لیگ" کے دروازے اس کے کھلاڑیوں پر بند ہو چکے ہیں، دنیا کی کوئی ٹیم پاکستانی سرزمین پر نہیں کھیلنا چاہتی، اور جو ایک ٹیم کھیلنے کے لیے آئی وہ بھی دہشت گرد حملے کا نشانہ بنی اور بمشکل اپنی جانیں بچا سکی۔
اس پوری صورتحال کو نظروں میں رکھا جائے تو واقعی بقول رمیز راجہ کہ ٹونٹی 20 ورلڈ کپ 2009ء میں پاکستان کی فتح ورلڈ کپ 92ء سے کہیں زیادہ اہم ہے۔ اور واقعی اس کے نتائج کہیں زیادہ دور رس ثابت ہوں گے اور یہ ایک فتح کئی سوالوں کا جواب ہے۔ اب بھارتی کرکٹ بورڈ سیاست کو بالائے طاق رکھتے ہوئے ایک چمپئن ٹیم کے کھلاڑیوں کی شمولیت پر ضرور غور کرے گا۔ پاکستان ایک مرتبہ پھر دنیائے کرکٹ میں ابھر کر سامنے آگیا ہے اور ثابت کر دیا ہے کہ ملک میں کرکٹ کبھی نہیں مر سکتی، اس ایک فتح نے ثابت کر دیا ہے کہ ٹونٹی 20 کرکٹ میں دنیا کے بہترین کھلاڑی اس کی ٹیم میں شامل ہیں، فتح پر جشن نے ثابت کر دیا کہ پاکستانیوں کی بڑی اکثریت آج بھی کرکٹ کی شیدائی ہے، بس فتح کے ذریعے ان کے دلوں میں دبی چنگاری کو شعلہ بنانے کی ضرورت ہے۔ دوسری جانب ورلڈ کپ 2011ء کے میچز شاید پاکستانی سرزمین پر تو نہ کھیلے جائیں لیکن اس کے امکانات روشن ہیں کہ مالی مشکلات کے شکار قومی کرکٹ بورڈ کو متحدہ عرب امارات میں اس اہم ایونٹ کی میزبانی کا شرف مل سکتا ہے اور اس کے نتیجے میں یقیناً مالی مشکلات ختم ہو جائیں گی۔
یہ واقعی ایک تاریخی لمحہ تھا جو تاعمر یاد رہے گا۔ ویل ڈن پاکستان

شاہد آفریدی کا فاتحانہ انداز

شاہد آفریدی کا فاتحانہ انداز

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

12 تبصرے

  1. جعفر says:

    سو سنار کی اور ایک لوہار کی۔۔۔
    خاص طور پر انڈیا کے لئے

    • بھارت کو تو اب سوچنا چاہیے کہ باتیں کرنے سے کچھ نہیں ہوتا۔ یہ باتیں ماضی میں پاکستان نے کی تھیں "ہم ہیں پاکستانی ہم تو جیتیں گے" وغیرہ، اسی ٹورنامنٹ میں منہ کے بل گرے۔ اب بھارت "یہ کپ کہیں نہیں جائے گا" اور "آنے دے" جیسی باتیں کر کے نجانے کیا ثابت کرنا چاہ رہا تھا؟ بھارت کو آئی پی ایل کی تھکاوٹ نے نہیں بلکہ کھلاڑیوں کی غرور میں تنی ہوئي گردنوں نے شکست دلائی۔ اب تھوکا ہوا چاٹنا پڑے گا اور پاکستانی کھلاڑیوں کو آئی پی ایل میں کھلانا پڑے گا۔ ایک بیان تو سامنے آ بھی چکا ہے دیکھیں کیا ہوتا ہے؟

  2. ورلڈ کپ پاکستانی عوام کو مبارک ہو........

  3. اللہ مبارک کرے ۔ اللہ کا شکر ہے

  4. سب ہی لوگوں کو یہ فتح مبارک ہو. پاکستان کے اندرونی حالات کے پیش نظر کرکٹ کے میدان میں یہ فتح جیسے تازہ خون بن کر آئ ہے. اپنی کرکٹ ٹیم سے سبق لیتے ہوئے ہمیں بحیثیت قوم اپنے آپ کو دنیا کے ہر میداں میں منوانے کے لئے اٹھ کھڑا ہونا چاہئیے.

  5. سب کو مبارک ہو اور آپ کی تحریر بہت خوب ہے، شکریہ

  6. میری طرف سے پوری قوم کو پاکستان کی یہ جیت مبارک ہو
    امید ہے کہ ان شا اللہ
    ہم جلد ہوش کے ناخن لیں گے
    اور ملک کی رونقیں بحال ہو جائیں گی
    اور نئی نسل کو بم دھماکوں اور خودکش حملوں کے علاوہ
    صحت مند سرگرمیوں کے بارے میں بھی کچھ سننے کو ملے گا

  7. نبیل says:

    وہ ایک چھکا۔۔ جسے تو گراں سمجھتا ہے
    ہزار چھکوں سے دیتا ہے آدمی کو نجات
    🙂

  8. Hasan says:

    کثیر الجہتی ایجنڈا پروفیسر سید ارشد جمیل

    http://ba-adab.blogspot.com/

  9. جعفر، طارق راحیل، مغل، یاسر ڈفر، نبیل اور حسن صاحبان تبصرہ جات کا بہت شکریہ اور خیر مبارک۔
    عنیقہ صاحبہ! بلاگ پر خوش آمدید۔
    نبیل بھائی! آپ کی اختراع تو بہت ہی شاندار ہے ۔۔۔ مزا آ گیا 🙂

  10. نبیلJune 23rd, 2009 بوقت 04:18

    وہ ایک چھکا۔۔ جسے تو گراں سمجھتا ہے
    ہزار چھکوں سے دیتا ہے آدمی کو نجات

    ــــــــــــــــــ
    آہا

  1. July 4, 2009

    [...] ہم کسی سے کم نہیں۔ دریچہ عالمی چیمپئن۔ فرحان دانش وہ ایک چھکا، یہ ایک فتح۔ ابوشامل مبارک باد۔ آوازِ [...]

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.