اسلم کمال کی خطاطی، جدید آہنگ میں

پاکستان میں خطاطی کو نئے انداز میں متعارف کروانے میں صادقین کے ساتھ جس شخص کا نام لیا جاتا ہے وہ اسلم کمال ہیں۔ آپ نے مصورانہ آہنگ میں خطاطی کر کے اس علم کو نئی جہتوں سے روشناس کرایا۔ مصورانہ خطاطی نے انہیں نہ صرف پاکستان بلکہ دنیا بھر میں شہرت بخشی، اور آپ کا شمار پاکستان کے چند بین الاقوامی شہرت یافتہ مصور و خطاط میں ہوتا ہے۔
آپ ایک جامع الکمالات شخصیت ہیں۔ آپ عالمی شہرت یافتہ مصور و خطاط ہونے کے علاوہ ایک اچھے افسانہ نگار، صاحب طرز شاعر اور سفر نامہ نگار کی حیثیت سے بھی جانے جاتے ہیں، بلکہ آپ ماہر اقبالیات بھی ہیں اور ایوان اقبال میں ڈائریکٹر پروگرام کے عہدے پر فائز ہیں۔
شاندار خدمات پر 1993ء میں آپ کو صدارتی تمغہ حسن کارکردگی سے نوازا گیا اس کے علاوہ آپ نے ملکی و بین الاقوامی سطح پر درجنوں اعزازات حاصل کیے۔
سرورق تخلیق کرنا آپ کا سب سے پسندیدہ اور مشہور کام ہے اور پاکستان کونسل آف آرٹس کے ریکارڈ کے مطابق 1961ء سے 2000ء تک آپ نے 18 ہزار سے زائد سرورق تخلیق کیے، جو ایک عالمی ریکارڈ ہے۔ آپ نے اقبال اور فیض کی شاعری کو بھی مصورانہ آہنگ میں پیش کیا اور خوب داد سمیس1۔آپ کے خطاطی کے مخصوص انداز کو خط کمال کہا جاتا ہے۔
ماہ رواں میں اردو محفل پر ایک گفتگو کے دوران برادر محترم نبیل حسن نے خط کمال کو فونٹ کے قالب میں ڈھالنے کی خواہش کا اظہار کیا لیکن اصل مسئلہ ان کی خطاطی کے نمونوں کی دستیابی کا تھا۔ خوش قسمتی سے میرے پاس محترم اسلم کمال کی مرتب کردہ کتاب "اسلامی خطاطی- ایک تعارف" موجود تھی جس میں اسلم کمال صاحب کی خطاطی کے درجنوں نمونے تھے۔ پہلی فرصت میں ان نمونوں کو اسکین کر کے فونٹ بنانے کے ماہر اشتیاق علی کو ارسال کر دیے گئے جنہوں نے انتہائی پھرتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے محض تین دنوں میں اس خط کو فونٹ کے قالب میں ڈھال کر زندہ جاوید کر دیا۔

یہ فونٹ آپ "جہان قلم" سے ڈاؤنلوڈ کر سکتے ہیں۔

جیسا کہ اوپر بیان کیا گیا کہ اسلم کمال صاحب ایک شاعر بھی ہیں، اس لیے اس تحریر کا اختتام انہی کی شاعری پر کرتے ہیں:

متاع دیدۂ تر سے
میں اپنے مو قلم کو با وضو کر کے
"ا" لکھتا ہوں، "ب" لکھتا ہوں
بنور روزن غار حرا
بفیض جلوہ ہائے روح الامیں
بنام رحمت للعالمیں
بیاد خوش نویسان رسول
بیاد باب شہر علم --- علی ابن ابی طالب
بیاد آں امام عاشقاں پور بتول
"ا" لکھتا ہوں اور "اللہ" لکھتا ہوں
میں "بسم اللہ" لکھتا ہوں

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

8 تبصرے

  1. نبیل says:

    بہت شکریہ برادرم۔
    یہ آپ کے بلاگ پر جگہ جگہ سوالیہ نشان کیوں نظر آ رہے ہیں؟

  2. arifkarim says:

    واقعی۔ ان سوالیہ نشانات کا کچھ کریں!

    • آپ جیسے ماہرین کے ہوتے ہوئے ہمیں انتظار کرنا پڑ رہا ہے 🙁 ۔ ابھی بھی منتظر ہوں کہ کوئی اس مسئلے کو حل کروائے۔

  3. اسید says:

    ہاں فہد بھائی یہ تو بڑا مسئلہ ہے.. .

  4. یہ سوالیہ نشانات والا مسئلہ خرم شہزاد خرم بھائی کے بلاگ کے ساتھ ہوا تھا اور یہی مسئلہ میرے بلاگ کے ساتھ بھی ہوا تھا۔ ہمارے بلاگ کے ساتھ یہ مسئلہ تب ہوا جب ہماری ہوسٹنگ کمپنی نے اپنا سرور تبدیل کیا تھا۔ شاید ایک سرور سے دوسرے سرور پر فائلز کاپی ہونے سے یا پھر کچھ اور ہونے سے اینکوڈنگ سسٹم میں کچھ تبدیلی آ جاتی ہے۔ میں کوڈنگ کے لئے نوٹ پیڈ پلس پلس استعمال کرتا ہوں اور یہ مسئلہ بھی نوٹ پیڈ پلس پلس سے ہی حل کیا تھا۔ نوٹ پیڈ پلس پلس آپ درج ذیل ربط سے حاصل کر سکتے ہیں۔
    http://notepad-plus.sourceforge.net/uk/site.htm
    اپنی تھیم کی تمام فائلز جن میں یونیکوڈ اردو کے الفاظ لکھے ہوئے ہیں جیسے single.php کو نوٹ پیڈ پلس پلس میں کھولیں اور پھر
    Encoding —-> Convert to UTF-8 without BOM
    کریں اور فائل کو محفوظ کر لیں اور پھر اسے تھیم کے فولڈر میں اپلوڈ کر دیں۔ امید ہے مسئلہ حل ہو جائے گا۔
    اب جبکہ پہلے سے موجود تھیم فائلز کا اینکوڈنگ سسٹم تبدیل ہو چکا ہے اور یونیکوڈ اردو کے تمام الفاظ خراب ہو چکے ہیں اس لئے ان فائلز پر یہ عمل کرنے سے مسئلہ حل نہیں ہو گا۔ اگر آپ کے پاس تھیم آف لائن یعنی آپ کے کمپیوٹر میں پڑیں ہیں تو ان پر یہ عمل کر کے اپلوڈ کر دیں۔ یا پھر جہاں سے پہلے آپ نے اردو کسٹمائزڈ تھیم اتاری تھی وہاں سے دوبارہ اتاریں اور یہی عمل کر کے اپلوڈ کر دیں۔
    میرے خیال میں بعض سرور صرف UTF-8 اینکوڈنگ سسٹم میں محفوظ کی ہوئی فائلز کو ٹھیک طرح سے رینڈر نہیں کرتے۔ یا پھر کوئی اور چکر ہے تو اس کا مجھے نہیں پتہ۔ لیکن اس طرح کرنے سے میرا مسئلہ حل ہو گیا تھا۔
    ویسے جب ہم ورڈپریس کے ذریعے لاگ ان ہو کر کسی تھیم کی اردو کسٹمائزیشن کرتے ہیں اور یونیکوڈ اردو کے الفاظ کسی فائل میں لکھ کر محفوظ کرتے ہیں تو ورڈپریس جو فائل محفوظ کرتا ہے اس کا اینکوڈنگ سسٹم کچھ ANSI as UTF-8 جیسا کر دیتا ہے۔ اور یہ بات مجھے ورڈپریس کے ذریعے اردو کسٹمائزڈ کی ہوئی فائلز کو نوٹ پیڈ پلس پلس میں کھولنے سے پتہ چلا۔
    Convert to UTF-8 without BOM کرنے سے فائل کا اینکوڈنگ سسٹم ANSI as UTF-8 ہو جاتا ہے۔
    باقی میرے خیال میں کافی ہو گیا ہے۔ مزید پچیدہ باتوں کا مجھے خود علم نہیں۔ میں تو خود ادھر ادھر سے پکڑ پکڑ کر کام چلاتا ہوں اس لئے اس مسئلے پر مزید بڑے لوگ ہی روشنی ڈال سکتے ہیں۔

  5. بلال صاحب بہت بہت شکریہ ۔۔۔ آپ نے میری اس مشکل کو بروقت حل کیا۔ اس کے لیے آپ کا مشکور ہوں۔ اللہ آپ کو اس کی جزا دے گا۔

  6. پہلے تو میں ابو شامل صاحب کو ایک عظیم خطاط جناب اسلم کمال صاحب کے بارے میں لکھنے پر مبارک باد پیش کرتا ہوں۔ اور ساتھ ہی ان کا شکریہ بھی ادا کرتا ہوں کہ ایسے موقعے پر انہوں نے مجھے بھی یاد رکھا ۔
    ابو شامل بھائی آپ کا بہت بہت شکریہ۔ اللہ تعالی آپ کو اس کی جزائے خیر عطا فرمائے۔ آمین۔
    والسلام
    محمد اشتیاق علی عطاری قادری

    • بہت بہت شکریہ اشتیاق۔ آپ جیسے محنت کرنے والے افراد بہت کم دیکھے ہیں۔ اللہ آپ کو مزید ہمت اور توانائی عطا فرمائے تاکہ آپ عرصۂ دراز تک اردو کے لیے خدمات انجام دیتے رہیں۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.